Thursday , 14 December 2017
Highlights

ساک کے وائس چیر مین کے اعزاز میں صدر ایثار راناکا ظہرانہ

ساک کے وائس چیر مین کے اعزاز میں صدر ایثار راناکا ظہرانہ، تنظیم کے دائرہ کار اور کارکردگی بڑھانے پر اتفاق۔

ڈاکٹر عمرانہ مشتاق کی سربراہی میں ”ساک لٹرئیری کلچر کلب “ کا قیام بھی عمل میں لایا گیا جس کے تحت علمی سطع کے پروگرام کا انعقاد کیا جائے گا
باہمی مشاورت سے ایسے قومی ایشیوز پر قلم اٹھانا چاہیے جن کا تعلق قومی مفاد ، ملکی سلامتی کے ساتھ عوام کے مسائل سے ہو ایثار رانا

لاہور (پ ر)صدر ساوتھ ایشین کالمسٹ کونسل(ساک) ایثار رانا کی جانب سے وائس چیر مین ملک اعظم کے اعزاز میں ظہرانے کا اہتمام کیا گیا جس میں ساک کی مرکزی باڈی کے ممبران ، ایثار رانا، ضمیر آفاقی، چوہدری خادم حسین، علی اصغر عباس، ہارون عدیم ، جاوید فاروقی، ڈاکٹر اویس فاروقی ،صغری صدف، صوفیہ بیدار، عمرانہ مشتاق، ملیحہ سید ، رکیہ غزل، ناصف اعوان، مظہر چوہدری نے شرکت کی ۔ ساک کے تمام ممبران نے نو منتخب وائس چئیر مین کو خوش آمدید اور ان کی شمولیت کو ساک کے کے لئے خو ش آئند قرار دیتے ہوئے کہا کہ ساک کے کام کرنے کے دائرہ کار خصوصاً ساک مماک سے تعلقات ، کالم نگاروں کی تربیت سازی ، قومی ایشوز اور قومی سطع کے سیمنار کے انعقاد میں مدد ملے گی اس موقع پر سیئنر صحافی چوہدری خادم حسین نے کہا کہ ہمیں ڈائیلاگ کو فروغ دینا اور مکالمے کا رواج ڈالنا چاہیے۔ جبکہ صدر ساک ایثار رانا نے اس پلیٹ فارم سے قومی سطع کے ایشو پر ایک زبان ہو کر بات کرنے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں باہمی مشاورت سے ایسے قومی ایشیوز پر قلم اٹھانا چاہیے جن کا تعلق قومی مفاد ، ملکی سلامتی کے ساتھ عوام کے مسائل سے ہو ان کی اس تجویز پر سب نے تائید کرتے ہوئے ا سے ایک اچھا عمل قرار دیا۔ جبکہ اس موقع پر تنظیمی صلاحتیوں میں اضافے اور مختلف سطع کے پرگرام کرنے کی ضروت اور اہمیت پر غور و غوض کرنے کے بعد ایک ڈاکٹر عمرانہ مشتاق کی سربراہی میں ”ساک لٹرئیری کلچر کلب “ جس میں ان کی معاونت ، ملیحہ سید اور رکیہ غزل کریں گیاس کلب کے تحت ساک کے ممبران اور سینئر کالمنگاروں کے ساتھ نششت رکھنے کے ساتھ لیکچرز کا اہمتام اور کلچر پروگرام بھی کئے جائیں گے۔ جبکہ اس موقع پر وائس چیئر مین ملک اعظم نے اس پلیٹ فارم کے دائرہ کار کو بڑھانے اور قومی سطع کے سیمنار کرانے کے لئے اپنے مکمل تعاون کا یقین دلاتے ہوئے کہا کہ ہیں سب کو مل جل کر اس تنظیم کی کارکردگی کو آگے بڑھانے کے لئے اپنا کردار ادا کرنا چاہیے جبکہ رانا ندیم احمد نے بین الاقوامی رابطوں اور مختلف ممالک میں وفود کے تبادلے کے لئے اپنی خدمات پیش کیں جن پر انہیں خوش آمدید کہا گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

You may use these HTML tags and attributes: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <strike> <strong>

Scroll To Top